لاہور کے میٹرک اور انٹر کے کیمسٹری پیپرز سوشل میڈیا پر لیک

بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن (BISE) لاہور میٹرک اور انٹرمیڈیٹ کے جاری امتحانات کے پیپرز کی محفوظ تقسیم کو یقینی بنانے میں ناکام رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق بی آئی ایس ای لاہور کے زیراہتمام ہونے والے امتحانات شروع ہونے سے ایک رات قبل میٹرک اور انٹر کے کیمسٹری کے فائنل پرچے لیک ہو گئے۔ بورڈ پیپرز شروع ہونے تک لیکس سے لاعلم رہا۔

دوسری جانب، BISE لاہور نے ایک اعلیٰ سطحی ٹیم تشکیل دی ہے جو اس بات کی تحقیقات کرے گی کہ سخت اقدامات کے باوجود کیمسٹری کے دو پرچے کیسے لیک ہوئے۔

یہ بھی پڑھیں
مون سون کا ایک اور 4 روزہ موسلادھار بارش یکم جولائی کو کراچی میں داخل ہوگا۔
ایسا لگتا ہے کہ دھوکہ دہی مافیا ایک بار پھر ملک بھر کے تعلیمی بورڈز کو سنبھالنے کے لئے بہت گرم ثابت ہو رہا ہے کیونکہ امتحانی مراکز میں پیپر لیک ہونے اور بڑے پیمانے پر دھوکہ دہی کی خبریں آئے روز منظر عام پر آتی رہتی ہیں۔

لاہور بورڈ کے علاوہ، بورڈ آف انٹرمیڈیٹ ایجوکیشن کراچی (BIEK)، بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن کراچی (BSEK) اور فیڈرل بورڈ آف انٹرمیڈیٹ اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن (FBISE) کو اب تک پیپر لیکس کا سامنا کرنا پڑا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں